679

حدیث

Print Friendly, PDF & Email
سَمِعْتُ أَبَا عَبْدِ اللَّهِ الصَّادِقَ ع يَقُول‏
و هُوَ عِيدُ اللَّهِ‏ الْأَكْبَرُ وَ مَا بَعَثَ اللَّهُ عَزَّ وَ جَلَّ نَبِيّاً قَطُّ إِلَّا وَ تَعَيَّدَ فِي هَذَا الْيَوْمِ وَ عَرَفَ حُرْمَتَهُ وَ اسْمُهُ فِي السَّمَاءِ يَوْمُ الْعَهْدِ الْمَعْهُودِ وَ فِي الْأَرْضِ يَوْمُ الْمِيثَاقِ الْمَأْخُوذِ وَ الْجَمْعِ الْمَشْهُود

امام صادق علیہ السّلام کا ارشاد ہے,:-
… عیدِ غدیر اللہ کی سب سے بڑی عید ہے اور خدا نے کسی بھی نبی کو نہیں مبعوث کیا مگر یہ کہ اس نبی نے اس دن کو عید منایا اور اس عید کی عظمت کو بخوبی درک کیا. اس دن کا نام عرش پر “یوم عہد و معہود” ہے اور زمین پر اس کو “یوم میثاق” اور”مشہود کے جمع” ہونے کا دن کہتے ہیں۔

(تهذيب الأحكام (تحقيق خرسان)، ج‏۳، ص۱۴۳، باب صلاة الغدير؛ إقبال الأعمال (ط – القديمة)، ج‏۱،ص۴۷۶؛ وسائل الشيعة،ج‏۸، ص۸۹)

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.